پاکستان

قصور: چار روز قبل اغواء کی جانے والی 7 سالہ بچی زیادتی کے بعد قتل

قصور: ایک اور بچی درندگی کی بھینٹ چڑھ گئی۔ چار روز قبل اغواء کی جانے والی سات سالہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا۔ بچی کی لاش برآمد کرلی گئی۔ چند ماہ کے دوران زیادتی کے بعد قتل کی جانے والی بچیوں کی تعداد 13 ہوگئی۔

قصور کے علاقے روڈ کوٹ سے چار روز قبل اغواء کی جانے والی سات سالہ بچی زینب کی لاش مل گئی ہے۔ سفاک ملزمان نے زینب کو زیادتی کے بعد گلا دبا کر قتل کرنے کے بعد اس کی لاش کو کوڑے کے ڈھیر پر پھینک دیا۔

واقعے کے خلاف اہل علاقہ نے شدید احتجاج کیا جبکہ علاقے میں کاروبار بند رہا۔ معصوم زینب کے والدین عمرہ کی سعادت کیلئے سعودیہ میں ہیں اور اپنی بچی کی موت پر غم سے نڈھال ہیں۔

اعداد و شمار کے مطابق ملزمان نے آٹھ ماہ میں 13 معصوم کلیوں کو بے دردی کے ساتھ مسل ڈالا ہے۔ پولیس آج تک ملزم کا سراغ لگانے میں کامیاب نہ ہو سکی۔

فرانزک رپورٹ اور دیگر پہلوؤں پر صرف کاغذی کارروائیاں تو کی جارہی ہیں لیکن مثبت پہلو آج تک سامنے نہیں آئے۔ قاتلوں کی آزادی قصور پولیس کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔

شہریوں نے واقعات کی روک تھام کیلئے وزیراعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے اور ملزمان کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔

loading...

متعلقہ مضامین

Close
Close