ٹیکنالوجی

گوگل میپ اب بس یا ٹرین میں رش سے بھی آگاہ کرے گا

شیئر کیجئے

کیلیفورنیا: گوگل میپ راستوں کا علم بتانے کے بعد اب بس یا ٹرین میں رش سے بھی آگاہ کرے گا۔

اس سے قبل 2017ء میں بھی اسی طرح کا ایک فیچر متعارف کروایا گیا تھا جس کے ذریعے سے یہ معلوم کیا جاسکتا تھا کہ ریسٹورینٹ اور اسٹور میں کتنا رش ہے۔

گوگل میپ کے اس فیچر سے آپ کو یہ معلوم ہوسکے گا کہ جس جگہ آپ جارہے ہیں اس راستے پر جانے والی ٹرین یا بس میں کتنا رش ہوگا۔

گوگل اس فیچر کو سب سے پہلے سڈنی میں تجربہ کرے گا۔ شروعات میں یہ فیچر دنیا کے 200 شہروں میں میسر ہوگا جن میں امریکا کے ساتھ ساتھ لاس اینجلس، نیو یارک، پورٹ لینڈ، اور بے ایریا شامل ہیں جبکہ یہ ان جگہوں کے 46 میٹرو مقامات پر میسر ہوگا اور اس سے اینڈرایئڈ اور آئی او ایس صارفین فائدہ اٹھا سکیں گے۔

گوگل میپ نے صبح 6 سے 10 بجے تک اپنے صارفین کی رپورٹ بناکر اس کا تجزیہ کیا ہے جس کے بعد انہیں یہ معلوم ہوا کہ اس وقت سب سے زیادہ رش بیونس آئرس، ساؤ پالو، پیرس، ٹوکیو اور نیویارک کی ایل ٹرینوں میں ہوتا ہے۔

علاوہ ازیں گوگل میپ نے ان ہی 200 شہروں کی ٹرینوں کی تاخیر اور آمد کے وقت کا بھی تمام تر ڈیٹا حاصل کرلیا ہے۔

جب بس کا شیڈول اصل وقت سے نہیں مل رہا ہو تو گوگل میپ آپ کو اس بس کے آنے کا صحیح وقت بتائے گا۔

اس کا ٹرانسٹ ویو بتائے گا کہ کون سے راستوں پر بس رک رہی ہے اور کہاں بس تاخیر سے پہنچے گی۔

loading...

متعلقہ مضامین

Close
Close